26

یو ایس اوپن سنگلز کا نیا فاتح مارن چلیچ

تصویر کے کاپی رائٹ
AFP

Image caption

چلیچ سنہ 2002 کے بعد دنیا میں سب سے زیادہ رینک (16) والے کھلاڑی ہے جنھوں نے کوئی گرینڈ سلیم فائنل میں جیت حاصل کی ہے

کروئشیا کے مارن چلیچ نے جاپان کے کیئی نشیکوری کو شکست دے کر سال کا آخری گرینڈ سلیم ٹینس ٹورنامنٹ یو ایس اوپن جیت لیا ہے۔

یہ ان کے کریئر کا پہلا گرینڈ سلیم ٹائٹل ہے۔

پیر کو نیو یارک میں کھیلے جانے والے مردوں کے سنگلز فائنل میں دنیا کے 14 ویں نمبر کے کھلاڑی مارن چلیچ نے جاپان کے 10 ویں رینک کے کھلاڑی کیئي نشكوري کو سیدھے سیٹ میں 3-6، 3-6، 3-6 سے شکست دے کر خطاب اپنے نام کر لیا۔

واضح رہے کہ دونوں ہی کھلاڑیوں کا یہ پہلا گرینڈ سلیم فائنل تھا۔

سیمی فائنل مقابلوں میں نشكوري نے دنیا کے نمبر ایک کھلاڑی نوواك جاكووچ کو ہرا کر ٹورنا منٹ کا سب سے بڑا اپ سٹ کیا تھا جبکہ اس سے قبل کروئشیا کے مارن چلچ نے راجر فیڈرر کو شکست دے کر ٹینس شائقین کو ششدر کر دیا تھا۔

سنہ 2005 کے بعد یہ پہلا موقع تھا جب رافیل نڈال، نوواك جاكووچ اور راجر فیڈرر میں سے کوئی بھی گرینڈ سلیم ٹورنامنٹ کے فائنل میں موجود نہیں تھا۔

تصویر کے کاپی رائٹ
Getty

Image caption

چلیچ نے نشکوری کے دو ایسز کے جواب میں 17 ایسز مارے

چلیچ نے فائنل میں کامیابی سے ہمکنار ہونے کے بعد کہا: ’مجھے علم نہیں کہ میں نے یہ کارنامہ کس طرح انجام دیا۔ یہ گذشتہ کئی برسوں اور بطور خاص اس سال کی کڑی محنت کا نتیجہ ہے۔‘

انھوں نے کہا کہ ’میری ٹیم بطور خاص گوران ایوانسووک (کروئشیا کے اس سے قبل گرینڈ سلیم فاتح) نے میرے اندر مادہ پیدا کیا۔ ہم سب نے واقعتا کڑی محنت کی ہے اور سب سے اہم بات یہ ہے کہ انھوں نے مجھے ٹینس سے لطف اندوز ہونا سکھایا اور ہمیشہ پرمزاح رہنے کا طریقہ بھی۔ میرے خیال میں میں نے اپنی زندگی کی بہترین ٹینس کھیلی ہے۔‘

نشکوری نے کہا: ’وہ آج واقعی بہترین کھیل کا مظاہرہ کر رہے تھے۔ میں اپنی امید کے مطابق نہیں کھیل سکا۔ یہ شکست مشکل ہے لیکن میں اس بات سے خوش ہوں کہ پہلی بار فائنل میں پہنچا تھا۔‘

تصویر کے کاپی رائٹ
AFP

Image caption

جاپان کے ٹینس کھلاڑی نشیکوری نے سیمی فائنل میں نواک جاکووچ کو شکست دے کر کسی بھی گرینڈ سلیم کے فائنل میں پہنچنے والے پہلے ایشیائی کھلاڑی بنے تھے

جاپان کے دارالحکومت ٹوکیو میں بی بی سی کے نامہ نگار کا کہنا تھا کہ یو ایس اوپن چیمپیئن شپ میں جوں جوں نشیکوری کامیابی سے آگے بڑھتے گئے جاپان میں لوگوں کی دلچسپیوں میں اضافہ ہوتا گیا۔

چلیچ نے روجر فیڈرر کو پہلے سیمی فائنل میں سیدھے سیٹس میں 3-6، 4-6، 4-6 سے شکست دی تھی۔

25 سالہ چلیچ نے ٹومس برڈچ اور روجر فیڈرر کے خلاف سیدھے سیٹس میں کامیابی حاصل کرنے کے بعد فائنل میں بھی اسی انداز کو برقرار رکھا اور ٹورنامنٹ میں لگاتار نو سیٹس میں کامیابی حاصل کرکے اہم کارنامہ انجام دیا۔



Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply