9

عرب لیگ کے اجلاس میں شاہ سلمان نے ایران پر تنقید کی جبکہ شام پر امریکی حملوں کا ذکر نہیں کیا

سعودی عرب

تصویر کے کاپی رائٹ
AFP

سعودی عرب کے شاہ سلمان نے عرب لیگ کے سالانہ اجلاس میں اگرچہ شام پر امریکی اور اس کے اتحادیوں کے حملے کا ذکر تو نہیں کیا لیکن ایران پر خطے میں ’مداخلت‘ کا الزام عائد کیا ہے۔

عرب لیگ کا یہ اجلاس امریکہ، برطانیہ اور فرانس کی جانب سے شام پر میزائل حملوں کے اگلے روز شروع ہوا ہے۔ یاد رہے کہ عرب لیگ نے شام کی رکنیت سات سال قبل منسوخ کر دی تھی۔

افتتاحی تقریب سے خطاب میں شاہ سلمان نے زیادہ وقت ایران پر تنقید کرنے پر سرف کیا۔

اسرائیل سے مذاکرات ’ناقابلِ معافی غلطی‘ ہوں گے: خامنہ ای

اسرائیلیوں کو اپنی سرزمین کا حق حاصل ہے: شہزادہ محمد

سعودی عرب پر سات میزائل حملے، ایک شخص ہلاک

انھوں نے کہا ’ہم ایران کی جانب سے عرب خطے میں دہشت گرد کارروائیوں کی مذمت کرتے ہیں اور ایران کی عرب ممالک کے امور میں مداخلت کو مسترد کرتے ہیں۔‘

یروشلم

اگرچہ شاہ سلمان نے شام پر مغربی ممالک کے اتحاد کی جانب سے حملے کا ذکر نہیں کیا تاہم انھوں نے اپنے خطاب میں شاہ سلمان نے امریکی سفارتخانے کو تل ابیب سے یروشلم منتقل کرنے کے امریکی صدر کے فیصلے کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا۔

انھوں نے کہا ’ہم ایک بار پھر یروشلم کے حوالے سے امریکی فیصلے کو مسترد کرتے ہیں۔ مشرقی یروشلم فلسطینی علاقوں کا اٹوٹ حصہ ہے۔

اس کے علاوہ شاہ سلمان نے مشرقی یروشلم میں اسلامی ورثے کی بحالی کے لیے 150 ملین ڈالر عطیے کا اعلان کیا۔

’سعودی عرب یروشلم میں اسلامی اثاثوں کی دیکھ بھال کے لیے 150 ملین ڈالر کا اعلان کرتا ہے۔‘



Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply