13

جب برطانیہ کے آسمانوں پر 15 ہزار بار بجلی کوندی

آسمانی بجلی

تصویر کے کاپی رائٹ
Reuters

Image caption

محکمۂ موسمیات نے آسمانی بجلی سے عمارتوں کو نقصان پہنچنے اور سیلاب کا خدشہ ظاہر کیا ہے جبکہ آسمانی بجلی کی یہ تصویر لندن شہر کی ہے۔

برطانیہ کے جنوبی حصے طوفانی بارش اور گرج چمک کی زد ہیں جبکہ آسمان پر بجلیاں لمحے لمحے بعد کوند رہی ہیں۔

بی بی سی موسمیات کے مطابق ہفتے اور اتوار کی درمیانی شب چار گھنٹے کے دوران تقریباً 15 ہزار آسمانی بجلیاں چمکیں۔

یہ گرج دار، چمک دار طوفان جنوبی انگلینڈ، مڈ لینڈ اور ویلز سے شمال کی جانب جا رہا ہے اور اتوار کو پورے دن جاری رہے گا۔

اسی بارے میں

انڈیا: 13 گھنٹوں میں 36 ہزار بار آسمانی بجلی گری

بہار میں آسمانی بجلی گرنےسے 26 افراد ہلاک

پرتگال میں ’آسمانی بجلی‘ سے لگی آگ

میٹ آفس نے شدید بارش اور سیلاب کے لیے زرد وارننگ جاری کی ہے۔

بہت سے لوگ اس طوفانی بجلی کو اپنے کیمرے میں قید کرنے اور ان کی ویڈیو بنانے کے لیے نکل آئے جسے انتہائی ‘بے وقوفانہ’ اور ‘بجلی کی خیرہ کرنے والی روشنی میں نکلنا’ قرار دیا گيا۔

آسمانی بجلی

تصویر کے کاپی رائٹ
PA/TowerRNLI

Image caption

دریائے ٹیمز پر آسمانی بجلی کے چمکنے کی یہ تصویر آر این ایل آئی نے سنیچر کی دیر شب کو لی ہے۔

آسمانی بجلی

تصویر کے کاپی رائٹ
Ems – Hayling Island/@auntymems

Image caption

ہائی لنگ جزیر پر ڈرامائی انداز کے ارغوانی آسمان کی تصویر لی گئی۔

بہت سے لوگوں نے کہا کہ انھوں نے اس قسم کا طوفان کبھی نہیں دیکھا اور کہا کہ ‘بجلی کی چمک متحیر کرنے والی تھی۔’

ایک دوسری خاتون نے کہا کہ ‘باہر جیسے دیوانگی کا شور تھا۔’

آسمانی بجلی

تصویر کے کاپی رائٹ
Andrew Lanxon Hoyle/@Batteryhq

Image caption

مشرقی لندن کے ڈالسٹن میں بجلی کے چمکنے سے سلیمانیہ مسجد روشنی میں نہا گئی

لندن

تصویر کے کاپی رائٹ
Kate/@tearscrynomore

Image caption

لندن کے کیمڈن میں آسمان کے اس منظر کی تصویر لینے والی فوٹوگرافر کیٹ نے کہا کہ ‘اس تصویر کو لینے میں مجھے ایک عمر لگ گئی’

بی بی سی موسمیات کے پیش کار ٹوماز شیفرنیکر نے اسے جب اسے لندن پر منڈلاتے دیکھا تو اسے ‘طوفانوں کی ماں’ کا لقب دے ڈالا۔

انھوں نے کہا: ‘اے بچے یہ تو بالکل دیوانگی ہے۔ ‘میں نے اتنی زیادہ تیزی کے ساتھ بجلی چکمنے والا طوفان اپنی زندگی میں کبھی نہیں دیکھا۔ زیادہ بجلیاں لپک رہی ہیں لیکن ان کی آواز بہت تیز نہیں ہے اور ان کا منظر قابل دید ہے۔’

آسمانی بجلی

تصویر کے کاپی رائٹ
Paul Greenford tyres/@Atko80

Image caption

پال گرین فورڈ ٹیمز کے ہینلی پر موجود کارواں میں تھی جب بارش اور آسمانی بجلی نے انھیں آ گھیرا۔

مغربی ڈورسیٹ

تصویر کے کاپی رائٹ
Harry Neary/@grumpyrocker

Image caption

جب طوفان شروع ہوا تو ہیری نیئری نے اپنا کیمرہ تیار کیا اور ڈورسیٹ میں بروڈونڈسر کے مقام پر یہ تصویر لی۔

بی بی سی موسمیات کے ماہر جیما پلم نے بتایا کہ طوفان شمال کی جانب رواں ہے اور اتوار تک رہے گا۔

میٹ آفس نے کہا کہ گھروں اور دفتروں میں تیزی سے پانی آ سکتا ہے۔ اور کہا کہ پانی کی تیز دھار اور گہرے پانی، آسمانی بجلی کے گرنے، اولے پڑنے اور تیز ہواؤں سے بعض عمارتوں کو نقصان پہنچ سکتا ہے۔

آسمانی بجلی

تصویر کے کاپی رائٹ
@samueltwilkinson/PA

Image caption

بجلی کی ایک لمبی لکیر نے لندن کے 310 میٹر اونچے شارڈ کو بونا کر دیا

آسمانی بجلی

تصویر کے کاپی رائٹ
Reuters

Image caption

لندن کے ویمبلی سٹیڈیم پر بجلی کو آنکھیں خیرہ کرنے والی کوند

آسمانی بجلی

تصویر کے کاپی رائٹ
Karl McCarthy/@McCarthyKarl

Image caption

لندن کے ساتھ پلے سٹو میں سینکڑوں افراد نے اپنے اپنے کیمرے سے طوفان کی تصاویر لیں

لندن

تصویر کے کاپی رائٹ
J/@dxtjxsh

لندن

تصویر کے کاپی رائٹ
@pamelsaurusrex/PA

Image caption

لندن کے کنگز کراس پر دو آدمیوں کو بارش سے بچنے کے لیے بھاگتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے جبکہ بجلی نے سار منظر روشن کر دیا ہے

۔



Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply