39

تل آبیب میں فضائی گاڑیوں کا پبلک ٹرانسپورٹ نظام

تصویر کے کاپی رائٹ
n

Image caption

یہ گاڑیاں 70 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار تک سفر کر سکیں گی تاہم کمرشل سطح پر متعارف ہونے کے موقعے پر توقع ہے کہ اس سے تیز تر گاڑیاں بھی شامل ہوں گی

اسرائیل کے شہر تل آبیب میں پبلک ٹرانسپورٹ کا ایک نیا نظام متعارف کروایا جائے گا جو کہ ’ہوور کارز‘ یعنی ہوا میں معلق گاڑیوں پر مبنی ہوگا۔

اس سروس کی ٹریک بنانے والی کمپنی سکائی ٹرین کے مطابق اسرائیل ایئرو سپیس انڈسٹریز کے احاطے میں 500 میٹر کا ایک ٹریک تجرباتی طور پر تیار کیا جائے گا جسے بعد میں شہر میں پھیلایا جائے گا۔

اس سسٹم میں دو افراد کے لیے گاڑیاں ہوں گی جو کہ ٹریک پر مقناطیسی ٹیکنالوجی کی مدد سے ہوا میں معلق ہوں گی۔ کمپنی کا کہنا ہے کہ یہ نظام سڑکوں کے بجائے آمد و رفت کا متبادل راستہ فراہم کرے گا۔

یہ نظام 2015 کے آخر تک تیار ہو جائے گا۔

واضح رہے کہ ان گاڑیوں میں کوئی ڈرائیور نہیں ہوگا۔

کمپنی کو امید ہے کہ تجرباتی ٹریک سے یہ بات ثابت ہو جائے گی کہ یہ ٹیکنالوجی کار آمد ہے اور اسے کمرشل نیٹ ورک بنانے کے لیے استعمال کیا جا سکتا ہے۔

منصوبے کے تحت مسافر کسی بھی سٹیشن پر اپنے لیے سمارٹ فون کی مدد سے گاڑی آرڈر کر پائیں گے اور پھر اپنی منزل کی جانب روانہ ہو سکیں گے۔

یہ گاڑیاں 70 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار تک سفر کر سکیں گی تاہم کمرشل سطح پر متعارف ہونے کے موقعے پر توقع ہے کہ اس سے تیز تر گاڑیاں بھی شامل ہوں گی۔

سکائی ٹرین کمپنی دنیا بھر میں مختلف منصوبوں پر کام کر رہی ہے جن میں امریکہ اور بھارت میں بھی مختلف منصوبے ہیں تاہم ان کا دارومدار اسرائیلی منصوبے کی کامیابی پر ہوگا۔

سکائی ٹرین امریکی ریاست کیلیفورنیا میں ناسا ریسرچ پارک میں واقعہ ہے اور انھیں امید ہے کہ یہ پبلک ٹرانسپورٹ کے نظام میں بڑے پیمانے پر تبدیلی لا سکیں گے۔

کمپنی کے چیف ایگزیکٹوو جیری سانڈرز کا کہنا تھا کہ اسرائیل کا منصوبہ ان کے لیے ایک ’بریک تھرو‘ منصوبہ ہے۔

سمارٹ سٹیز بنانے کے ماہر جو ڈگنان کا کہنا ہے کہ یہ نظام موجودہ ڈھانچے اور خود کار گاڑیوں کا میلاپ ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ اس منصوبے سے مارکیٹ میں خودکار گاڑیوں کے لیے جگہ بنے گی، یہ ٹرین کے مقابلے میں سستا ہے اور یہ شہر کے کچھ حصہ کا استعمال کرتا ہے جو کہ ابھی تک غیر استعمال شدہ ہے یعنی ززین سے 20 فٹ اونچی جگہ۔



Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply