26

بلوچستان: بم دھماکوں میں ایک ہلاک، 13 زخمی

تصویر کے کاپی رائٹ
Getty

Image caption

نامعلوم افراد نے ایک سائیکل پر دھماکہ خیز مواد نصب کر کے اسے اسمگلی روڈ پر ایک دکان کے قریب کھڑا کیا تھا

پاکستان کے صوبہ بلوچستان میں بم دھماکوں کے دو مختلف واقعات میں فرنٹیئر ورکس آرگنائزیشن کا ایک اہلکار ہلاک جبکہ 13 افراد زخمی ہو گئے۔

ان میں سے ایک دھماکہ صوبائی دارالحکومت کوئٹہ میں سینیچر کی شب ہوا۔

کوئٹہ پولیس کے ایک اہلکار نے بتایا کہ نامعلوم افراد نے ایک سائیکل پر دھماکہ خیز مواد نصب کرکے اسے اسمگلی روڈ پر ایک دکان کے قریب کھڑا کیا تھا۔

دھماکہ خیز مواد پھٹنے سے کم از کم 11افراد زخمی ہوگئے۔ پولیس کے مطابق زخمیوں میں دو بچے بھی شامل ہیں۔ زخمیوں کو علاج کے لیے سول ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔

زخمیوں میں سے دو کی حالت تشویش ناک ہے، اور انھیں علاج کے لیے سی ایم ایچ منتقل کر دیا گیا ہے۔

بم دھماکے کا دوسرا واقعہ ایران سے متصل ضلع کیچ میں پیش آیا۔

کیچ میں انتظامیہ کے ایک اہلکار نے بتایا کہ نامعلوم افراد نے کیچ کے علاقے بیری میں دھماکہ خیز مواد نصب کیا تھا۔ دھماکہ خیز مواد اس وقت پھٹ گیا جب وہاں سے ایف ڈبلیو او کی ایک گاڑی گزر رہی تھی۔

دھماکے سے ایف ڈبلیو او کا ایک اہلکار ہلاک جبکہ دو زخمی ہوگئے۔

ایف ڈبلیواس علاقے میں سڑک کی تعمیر میں مصروف ہے۔

دو روز قبل اس ضلع کے علاقے شاپک میں بھی ایک بم دھماکے میں ایف ڈبلیو او کا ایک اہلکار ہلاک ہوا تھا۔

بیری کے علاقے میں رونما ہونے والے واقعے کی تاحال کسی نے ذمہ داری قبول نہیں کی ہے۔ تاہم دو روز قبل شاپک کے علاقے میں بم حملے کاجو واقعہ پیش آیا تھا اس کی ذمہ داری کالعدم بلوچستان لبریشن فرنٹ نے قبول کی تھی۔



Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply