28

اسلام آباد یونائیٹڈ کی ملتان سلطان کو 33 رنز سے شکست

تصویر کے کاپی رائٹ
PSL

Image caption

20 اوورز میں چار وکٹوں کے نقصان اسلام آباد یونائیٹڈ نے 185 رن بنائے اور ملتان کو جیتنے کے لیے بڑا ہدف دیا

پاکستان سپر لیگ کے تیسرے ایڈیشن میں منگل کو شارجہ میں کھیلے گئے میچ میں اسلام آباد یونائیٹڈ نے ملتان سطان کو 33 رنز سے شکست دے دی۔

ملتان سلطان نے ٹاس جیت کر اسلام آباد یونائیٹڈ کو پہلے کھیلنے کی دعوت دی۔ اسلام آباد یونائیٹڈ نے ملتان سلطان کو میچ جیتنے کے لیے 186 رنز کا ہدف دیا۔

ملتان سلطان کی ٹیم 19.1 اوور میں 152 رن بنا کر آل آؤٹ ہو گئی۔ اس میچ میں فتح کے بعد اسلام آباد یونائیٹڈ پوائٹس ٹیبل پر پہلے نمبر پر آ گئی ہے۔

اسلام آباد یونائیٹڈ نے پہلے کھیلتے ہوئے بیٹنگ کا آغاز بہت جارہانہ انداز سے کیا۔ ٹیم کے اوپنر ڈومنی اور رونکی نے پر اعتماد انداز میں بیٹنگ کی۔

اسلام آباد یونائیٹڈ کی پہلی وکٹ 46 کے مجموعی سکور پر گری، جب ڈومنی 6 رن بنا کر رن آؤٹ ہوئے۔ ڈومنی کے بعد ہیلز کریز پر آئے۔

تصویر کے کاپی رائٹ
PSL

ہیلز اور رونکی نے ٹیم کے زیادہ سکورر بنانے میں اہم کردار اد کیا۔ ہیلز نے 48 رن بنائے۔ انھیں عمر گل نے آؤٹ کیا جبکہ رونکی نے 58 رن بنائے۔ اس کے بعد حسین طلعت نے بھی اچھی بیٹنگ کی اور وہ 21 گیندوں پر 36 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے۔

اس طرح 20 اوورز میں چار وکٹوں کے نقصان اسلام آباد یونائیٹڈ نے 185 رن بنائے اور ملتان کو جیتنے کے لیے بڑا ہدف دیا۔

رونکی کو مین آف دی میچ قرار دیا گیا۔

ملتان سلطان کی بیٹنگ کا آغاز زیادہ اچھا نہیں تھا اور پہلے ہی اوور میں اس کے دو کھلاڑی آؤٹ ہو گئے تھے۔ اوپنر کمارا سنگاکارا پہلے پہی اوور میں ایک رن بنا کر آؤٹ ہو گئے۔ پہلے ہی اوور میں ملتان سلطان کی دوسری ووکٹ اُس وقت گری جب سیف بدر کو پٹیل نے صفر پر آؤٹ کر دیا۔

احمد شہزاد تین رنز، صہیب مقصود 13 رنز اور کپتان شعیب ملک 12 رن بنا کر آؤٹ ہوئے۔

ملتان سلطان کے 50 کے مجموعی سکور پر پانچ کھلاڑی آؤٹ تھے اور ایسا لگتا تھا کہ ٹیم سو رنز بھی مکمل نہیں کر پائے گی۔

ایسے میں پولارڈ نے ٹیم کو سہارا دیا اور بہترین بیٹنگ کی۔ اس دوران پولارڈ کے علاوہ ملتان سلطان کا کوئی بھی بیٹسمین جم کر نہیں کھیل سکا۔

پولارڈ نے کوشش جاری رکھی اور انھوں نے مشکل وقت میں پانچ چوکوں اور چھ چھکوں کی مدد سے 47 گیندوں پر 73 رنز بنائے۔

ملتان سلطان کی پوری ٹیم 19.1 اوور میں 152 رن بنا کر آؤٹ ہو گئی۔

ملتان سلطان کی شکست کے بعد پلے آف رؤانڈ میں کوالیفائی کرنے کا انحصار پشاور زلمی پر ہے۔ ملتان سلطان کے لیے اگلے مرحلے کے لیے کوالیفائی کرنے کے لیے ضروری ہے کہ پشاور زلمی کو اپنے دو میچوں میں سے کم سے کم ایک میں شکست ہو۔

تصویر کے کاپی رائٹ
PSL

Image caption

پولارڈ کے علاوہ ملتان سلطان کا کوئی بھی بیٹسمین جم کر نہیں کھیل سکا۔



Source link

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

Leave a Reply